پولیس کا اسلام گڑھ ٹرسٹ ہسپتال پر چھاپہ۔جعلی ڈاکٹر۱۰ روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے.


اسلام گڑھ (خصوصی نامہ نگار): ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر ندیم نے ایس ایچ او تھانہ اسلام گڑھ وسیم نواز کے ہمراہ اسلامگڑھ ویلفیئر ٹرسٹ اسپتال پر چھاپہ مارا اور جعلی میڈیکل ڈگریوں کے الزام میں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر وسیم کو گرفتار کرلیا گیا۔چھاپا محکمہ صحت کے حکام کی ہدایت پر ترتیب دیا گیا تھا۔ ذرائع کے مطابق ، ڈاکٹر وسیم نے پولیس حراست میں اعتراف کیا کہ ان کی ڈگریاں جعلی ہیں۔ مزید یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ ہسپتال میں نوکری کی درخواست کے ساتھ جمع کرای جانے والی ڈگری اور شناختی کارڈ پر والد یت کے خانے میں والد کے مختلف نام تھے اور ذرائع نے مزید تصدیق کی ہے کہ اسپتال کی ایک ممبر ایگزیکٹو کمیٹی نے صدر ہسپتال کو ممکنہ جعلسازی سے آگاہ کیا ، جسپر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ انکشاف ہوا کہ ڈاکٹر وسیم میڈیکل کا طالب علم تھا لیکن متدد کوششوں کے باوجود امتحانات کلیئر نہیں کرسکا۔ گرفتار ڈاکٹر نے مزید قبول کیا کہ اس نے جعلی ڈگری 4 لاکھ روپے دے کر حاصل کی۔ یہ تشویشناک ہے کہ اسپتال کی انتظامیہ نے ڈاکٹر کی خدمات حاصل کرنے سے قبل پی ایم ڈی سی سے میڈیکل ڈگری کی صداقت کیتصدیق نہیں کی۔ پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل ڈگری آرڈیننس 1962 کے مطابق ، جو بھی جعلی ڈگری ہاصل کرنے میں یا نوکری حاصلکرنے میں ڈاکٹر کی معاونت کرے گا یا اس کی خدمات حاصل کرے گا وہ برابر کا ذمہ دار ہے۔

ا

یس ایچ او تھانہ اسلام گڑھ چوہدری وسیم نے ملزم محمد وسیم کے خلاف 488/471,465/467,419/420 APC کے تحت مقدمہ درج کر کے ملزم کا 10 دن کا جسمانی ریمانڈ حاصل کر لیا۔آئندہ چند روز میں کیس میں بڑی پیش رفت اور سنسنی خیز انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے

مقامی بافراد اور اور سیز کشمیرز نے بروقت کاروای کرنے پر ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر ندیم اور ایس ایچ او اسلام گڑھپولیس وسیم نواز کی تعریف کی ہے۔